Navigation Menu+

پانی پینے کی سنتیں

پانی پینے کی سنتیں

by مفتی امان اللہ خان قائمخانی

 دائیں ہاتھ سے پینا،کیوں کہ بائیں ہاتھ سے شیطان پیتا ہے۔[1

 پانی پینے سے پہلے اگر کھڑے ہوں تو بیٹھ جانا، کھڑے ہوکر پینا منع ہے۔[2

بِسْمِ اللہ کہہ کر پینا اور پی کر اَلْحَمْدُ لِلہِ  کہنا۔[3

 تین سانس میں پینا اور سانس لیتے وقت برتن کو منہ سے الگ کرنا۔[4

 برتن کے ٹوٹے ہوئے کنارے کی طرف سے نہ پینا۔[5

 مشک سے منہ لگاکر پانی نہ پئیں یا کوئی بھی ایسا برتن ہو جس سے دفعتاً پانی زِیادہ آجانےکا احتمال ہو یااس برتن سے سانپ ،بچھووغیرہ آنے کا اندیشہ ہو۔[6

۷) صرف پانی پینے کے بعد یہ دُعا پڑھنا بھی مسنون ہے

 اَلْحَمْدُ لِلہِ الَّذِیْ سَقَانَا عَذْ بًا فُرَاتًا بِۢرَحْمَتِہٖ وَلَمْ یَجْعَلْہُ مِلْحًا اُجَاجًا بِۢذُنُوْبِنَا[7

ترجمہ: سب تعریفیں اللہ کے لیے ہیں جس نے اپنی رحمت سے ہمیں میٹھا، خوشگوار پانی پلایا اور ہمارے گناہوں کے سبب اس کو کھارا، کڑوا نہیں بنایا۔

 پانی پی کر اگر دوسروں کو دینا ہے تو پہلے داہنے والے کو دیں اور پھر اسی ترتیب سے دَورختم ہو۔ اسی طرح چائے یا شربت بھی پیش کریں۔[8

 دودھ پینے کے بعد یہ دُعا پڑھیں

 اَللّٰہُمَّ بَارِکْ لَنَا فِیْہِ وَزِدْنَا مِنْہُ [9

ترجمہ: اے اللہ! تو اس میں ہمیں برکت دے اور یہ ہم کو اور زیادہ نصیب فرما۔

 پلانے والے کو آخر میں پینا۔

 

 

[1]؎      صحیح مسلم :2/172،باب آداب الطعام والشراب
[2]؎    صحیح مسلم :2/173،باب فی الشرب قائمًا
[3]؎ جامع الترمذی :2/10،باب ماجاء فی التنفس فی الاناء… مشکوٰۃ المصابیح: 2/371 باب الاشربۃ
[4]؎  صحیح مسلم: 2/174،باب کراہیۃ التنفس فی فنس الاناء واستحباب التنفس خارج الاناء… جامع الترمذی:2/10 باب ماجاء فی التنفس فی الاناء
[5]؎   سنن ابی داؤد:2/167باب فی الشرب من ثلمۃ القدح
[6]؎   صحیح البخاری:2/841 باب الشرب من فم السقاء… صحیح مسلم:2/173  باب آداب الطعام والشراب
[7]؎   روح المعانی:27/149
[8]؎ صحیح البخاری:2/840 ، باب الایمن فالایمن فی الشرب… صحیح مسلم:2/147، باب استحباب ادارۃ الماء اللبن ونحوہما علی یمین
[9]؎  سنن ابی داؤد:2/198 ، باب مایقول اذا شرب اللبن… جامع الترمذی: 2/183، باب مایقول اذا اکل طعامًا